ایم ڈی اے آفس میں ہونے والی سرقہ بالجبر معہ قتل کی واردات میں ملوث ملزمان گرفتار

Friday, December 14, 2018

ملتان () مورخہ09/10.12.2018 کی شب درمیانی MDA مین آفس میں ایک انتہائی افسوس ناک واقعہ پیش آیا جس میں 5 کس ملزمان نے MDA آفس میں موجودATM مشین توڑنے کی واردات میں ناکامی پرسکیورٹی گارڈ کو شدید تشد د کے بعد قتل کر کے موقع سے فرار ہوگئے۔ اس واردات کے بعد بالخصوص MDA ملازمان و عوام الناس میں عدم تحفظ کا احساس پایا جانے لگا کیونکہ یہ واردات مین MDAآفس میں ہوئی جو کہ پوش علاقہ میں واقع ہونے کے ساتھ ساتھ اس آفس میں واردات کے وقت 3 سکیورٹی گارڈ بھی موجود تھے۔ اس اندوہناک سنگین سرقہ بالجبر معہ قتل کی واردات کے بعد جناب CPOصاحب کی خصوصی ہدایت پرمحمد کاشف اسلم SSP آپریشنز، توصیف حیدر SSP انوسٹی گیشن، زنیرہ اظفر ایس پی کینٹ کی سربراہی میں مقبول احمد DSP/INV، ملک طارق محبوب DSPکینٹ کی زیر نگرانیCIA افسران و ملازمان پر مشتمل ٹیم تشکیل دے کر اس واردات کو ٹریس کرنے کا ٹاسک دیا گیا جس پر افسران بالا کی سربراہی میں انسپکٹر طاہر اعجاز انچارج CIA  بشیر احمد SI/CIA،محمد صابر SI/CIA، محمد رمضان ASI/CIA،ساجد ممتاز ہیڈ کنسٹیبل ودیگر ملازمان CIAنے انتہائی قلیل عرصہ میں جدید سائنسی طریقہ تفتیش،بہترین پولیس ورک اورمسلسل 3 دن اور رات کی محنت کے بعد اس سرقہ بالجبر معہ قتل کی واردات میں ملوث زاہد مجتبیٰ گینگ کو ٹریس کر کے اس کے 5 ممبران 1۔ زاہد مجتبیٰ  2۔ شہباز وسیم عرف کنی  3۔ محمد اسد  4۔ کاشف الیاس5۔ بلاول

 کو گرفتار کر نے میں کلیدی کردار ادا کیا۔

اس واردات کا سرغنہ زاہد مجتبیٰ جو کہ MDA آفس میں ہی بطور ڈرائیور ڈیوٹی سرانجام دے رہا ہے۔

 زاہد مجتبیٰ اور اس کے ساتھیوں نے پیسوں کی لالچ میں آکریہ واردات کرنے کا پروگرام بنایا۔پروگرام کو عملی جامہ پہنانے کے لئے واردات سے پہلے MDA آفس کی مکمل ریکی بھی زاہد مجتبیٰ نے خود کروائی اور بوقت وقوعہ زاہد مجتبیٰ دیگر ملزمان کے ساتھ موقع پر موجود رہا جب مقتول سکیورٹی گارڈ خلیل احمد نے مزاحمت کی تو اس مزاحمت کے دوران خلیل احمد نے زاہد مجتبیٰ کو شناخت کر لیا۔ اسی شناخت ہونے کے ڈر کی وجہ سے زاہد مجتبیٰ اور دیگر ملزمان نے سوٹوں سے وار کر کے انتہائی بے دردی سے خلیل احمد کو قتل کر دیا اور خود موقع سے فرار ہوگئے۔ اس واردات میں ملوث ملزمان کی گرفتاری میں ITٹیم، ایلیٹ ٹیم، SHO تھانہ چہلیک نے بھی اہم کردارادا کیا۔اس واردات کے ٹریس ہونے سے عوام الناس نے اطمینان کا اظہار کیا ہے اور پولیس کے کردار، لگن اور محنت کو سراہا ہے۔ملتان پولیس آئندہ بھی عوام کے جان و مال کے تحفظ کے لئے ہمیشہ کوشاں رہے گی۔